بیٹی ہو یا بیٹا دونوں کا ہی ماں سے گہرا رشتہ ہوتا ہے مگر جس طرح ماں بیٹوں کو انتہائی پیار محبت و شفقت سے پالتی ہے بالکل اسی طرح بیار بھی ماں کی خاطر بڑی سی بڑی مصیبت سے لڑ جاتا ہے۔ لیکن سوچیں کہ اس

بیٹے کی کیا حالت ہوئی ہو گی جب اسے اپنی ماں کی میت موٹر سائیکل پر لے جانی پڑی ہو گی۔ جی ہاں آپ نے ٹھیک پڑھا ہے کیونکہ یہ واقعہ بھارت کی ریاست مدھیا پردیش کے علاقے انوپر کے گاؤں گوڈاپورکا ہے جہاں

والدہ کی میت کو سندر یادیو نامی بیٹا 80 کلومیٹر کا سفر طے کر کے گھر لے گیا۔ یہ سب اس لیے ہوا کہ ایمبولینس والے اس سے میت لے جانے کے 5 ہزار روپے مانگ رہے تھے جو وہ دے نہیں پا رہا تھا کیونکہ یہ

بہت غریب ہے۔ مجبور و لاچار بیٹے کی حالت پر کسی نے رحم نہ کھایا پر بیٹا کیسے ماں کو اکیلا چھوڑ سکتا تھا۔ لاش کو گھر لے جاتے ہوئےاس لڑکے کا کہنا تھا کہ اس کی جان سے پیاری ماں اس دنیا سے اس لیے چلی گئی کیونکہ اسپتال والوں نے ٹھیک سے علاج نہیں کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں